فلمسٹار بابرہ شریف نے زندگی کی 64 بہاریں دیکھ لیں
فلمی کریئر کے دوران 150 سے زائد فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے


لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 دسمبر2018ء)150 سے زائد فلموں میں کام کر نے والی پاکستانی فلمسٹار بابرہ شریف نے اپنی زندگی کی 64 بہاریں دیکھ لیں۔بابرہ شریف 10دسمبر 1954ء کو لاہور میں پیدا ہوئیں ۔ ملک کی کئی اداکارائوں کے برعکس بابرہ شریف نے اپنے فنی کرئیر کا آغاز ماڈلنگ سے کیا ،1973ء میں واشنگ پائوڈر کے اشتہار کے ذریعے وہ ملک کے ہر گھر میں پہچانی جانے لگیں، اسی برس انہوں نے کرن کہانی سے اداکاری کا باقاعدہ آغاز کیا۔

1974ء میں معروف اداکارہ اور ہدایتکارہ شمیم آرا نے بابرہ شریف کو اپنی فلم ’’بھول ‘‘میں مرکزی اداکارہ کے طور پر شامل کیا جس کے بعد انہوں نے پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔بابرہ شریف نے اپنے فلمی کریئر کے دوران 150 سے زائد فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے اور اس دوران انہوں نے ندیم، وحید مراد، محمد علی ، شاہد، غلام محی الدین یہاں تک کے سلطان راہی کے مدمقابل بھی کام کیا۔

اپنے فلم کریئر کے دوران بابرہ شریف نے مختلف قسم کے کرداروں کو بخوبی نبھایا، اسی لئے انہیں 70اور 80کی دہائی میں پاکستان کی صف اول کی اداکارہ کی حیثیت سے جانا جاتا ہے۔ انکی قابل ذکر فلموں میںپیار کا وعدہ،منزل، تیرے بنا کیا جینا،دامن لاجواب، وفا، کائنات،کس نام سیپکاروں، حق مہر، خدا اور محبت، بدنام، گن مین، سن آف ان داتا، آنگن، دیوانیدو، چکر، جوانی دیوانی،ماں بنی دلہن، کالی، انسان، دودل، ایک چہرہ دو روپ، مہک، شبانہ، سلاخیں، ساتھی، باغی حسینہ، جان من، گریبان اور گھائل شامل ہیں۔بابرہ شریف نے مقبولیت کے عروج پر فلم نگری کو خیر باد کہا ۔
خبر کا مکمل متن پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے
اُردو پوائنٹ شوبز کا مرکزی صفحہ