اُردو پوائنٹ پکوان

اچار آم وکریلے


اشیاء: کریلے ایک کلو (عمدہ) آم دو کلو(کچے) سرسوں کا تیل دو کلو کلونجی پچیس گرام میتھرے پچاس گرام ہلدی تھوڑی سی سونف پچاس گرام سرخ مرچ حسب ذائقہ ترکیب: کچے آموں کو دھو کر اچھی طرح سے خشک کر لیں اور ان کی چار چار عدد پھانکیں کر لیں۔ گٹھلیاں بھی نکال دی جائیں ۔ کیلوں کو بھی دھو کر ان کو اچھی طرح سے خشک کر لیا جائے۔ اور ان کو بھی کاٹ کر چار چار عددٹکڑے کر لئے جائیں۔ بیج نکال دئیے جائیں ۔ میتھروں کے سوا تمام مصالحہ جات کو آدھ پسا کر لیا جائے۔ میتھروں سمیت ان مصالحوں میں تھوڑا سا تیل ڈال کر اس کا ملغونہ سا بنا لیا جائے ۔ان کٹے ہوئے آموں میں یہ مصالحہ لگا دیں اور ان کو مرتبان میں ڈال کر باقی کا مصالحہ اس کے اوپر ڈال کرا س کو اچھی طرح سے ہلا لیں ۔ اب مرتبان کا منہ ململ کے صاف کپڑے سے اچھی طرح سے بند کر دیا جائے۔ تین دن تک دھوپ میں پڑا رہنے دیں اور اس دوران روزانہ ہی اس کو ایک دو مرتبہ اچھی طرح سے ہلا دیا جائے۔ کٹے ہوئے کریلے کے ٹکڑوں کو بھی آم کے اچار میں ڈال کر اچھی طرح سے ہلا دیں تاکہ کریلے اور آم اچھی طرح سے آپس میں مل جل جائیں ۔ مرتبان کا منہ کپڑے سے بند کر کے لگا تار دو دن دھوپ میں رکھیں اور اس کے بعد اس میں سرسوں کا تیل ڈال دیا جائے۔ تیل اس قدر ہو کہ آم اور کیلے تیل میں اچھی طرح سے ڈوب جائیں۔ اس کو ململ کے کپڑے سے بند کر کے چار دن تک پھر دھوپ میں رکھیں اور اس دوران میں اس کو روزانہ خوب اچھی طرح سے ہلا تے رہیں ۔ اچار مکمل طور پر تیار ہو چکا ہو گا۔ اگر اب بھی تیار نہ ہو ا ہو تو اس کو چار پانچ دن مزید اسی طریقے سے بند دھوپ میں رکھا جائے۔ آپ اس میں اپنی پسند کے مطابق کابلی چنے اور لہسن کی تریاں بھی ڈال سکتے ہیں۔ نہایت ہی مزیدار اور لذت سے بھر پور اچار ہے۔
ترکیب کا مکمل متن پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے
اُردو پوائنٹ پکوان کا مرکزی صفحہ